’میں وہ نہیں کرتی جو مرداداکار چاہتے‘مغرور کہے جانے پر روینہ ٹنڈن کا موقف آگیا

ممبئی (پاکستان نیوز) بھارتی اداکارہ روینہ ٹنڈن نے کہا ہے کہ 90 کی دہائی میں اپنے عروج میں جب میں فلموں میں کسی کردار کو منع کرتی تو مجھے مغرور کہا جاتا تھا لیکن حقیقت یہ نہیں ، انہوں نے کہاکہ انڈسٹری میں میرا کوئی گارڈ فادر نہیں اور نہ ہی میں کسی کیمپ کا حصہ رہی ہوں اس لیے مجھے کسی اداکار کی جانب سے پروموٹ نہیں کیا گیا۔

اپنے ایک انٹرویو میں اداکارہ نے کہا کہ میں وہ نہیں کرتی تھی جو مرد اداکار چاہتے تھے، وہ مجھے بیٹھنے کے لیے کہے تو میں بیٹھ جاو¿ ، یعنی میں نے فلموں میں کردار کے لیے مرد اداکاروں کی کوئی خواہش پوری نہیں کی، اس معاملے میں خواتین صحافی بھی میرا ساتھ دینے کے بجائے ان مرد اداکاروں کی کٹھ پتلیاں بنی رہیں اور میرے خلاف صرف اس لیے مضمون لکھے گئے کیوں کہ کسی مرد اداکار کی انا کو چوٹ پہنچی تھی جب کہ حیرت کی بات تو یہ ہے کہ خواتین صحافی صرف میرے ساتھ نہیں بلکہ دیگر اداکاروں کے ساتھ بھی ایسا کرتی تھیں۔





متعلقہ خبریں

Not Any News

ویڈیو
صحت

چہرے کے کیل مہاسوں سے نجات کے نسخے

دنیا بھر سے چار انتہائی دلچسپ بیوٹی ٹپس

کورونا کچھ لوگوں کو زیادہ متاثر کیوں کرتا ہے؟ معمہ حل

آپکاشہر

ary news live

ary news live

پولیس میں ہزاروں بھرتیاں، چند دنوں میں اشتہار جاری ہونے کا امکان

بلاگ

وہ پاکستانی کرکٹر جس نے ورلڈ کپ کے دوران بھی اپنی بیگم ہوٹل روم کی الماری میں چھپائے رکھی

افغانستان کی قومی ٹیم کا کھلاڑی ’ کرپشن ‘ کرتے پکڑا گیا ، بڑی سزا سنا کر مثال قائم کر دی گئی

پاکستانی کرکٹر عمر اکمل پر پابندی عائد کردی گئی

Copyright 2020 © Pakistan News, All rights reserved.
All rights reserved. Reproduction or misrepresentation of material available on this web site in any form is infringement of copyright and is strictly prohibited.