48

بورےوالا”فنکار مر بھی جائے توبھی فن زندہ رہتا ہے”

بورےوالا(تحریر ۔۔تہمینہ رانا)
میرے آپکے اور ہمارے بچوں کے پسندیدہ فنکار آج ہم میں نہیں رہے ۔ٹی وی اور تھیٹر کے معروف فنکار مطلوب الرحمان عرف منالاہوری ” زکوٹا جن ” انتقال کرگئے ، انہوں نے بچوں کے مشہورٹی وی سیریل “عینک والا جن میں “زکوٹاجن” کے کردارسے شہرت پائ ، بعدازاں بچوں بڑوں کے پسندیدہ سید حسیب پاشا المعروف Hamoon Jadugar اور زکوٹا جن نے الحمرا میں مسلسل 8 سالوں تک ڈرامہ” جن اور جادوگر” کے نام سے ڈرامہ پیش کرکے مقبولیت کے ریکارڈ قائم کئے ، ہامون جادوگر اور زکوٹا کی نوک جھونک سے بچے بڑے سبھی محظوظ ہوتے تھے، ڈرامہ کی پسندیدگی کاعالم یہ تھا کہ پاکستان بھر سے بچے اپنے والدین کے ہمراہ ڈرامہ جن اور جادوگردیکھنے الحمرا ہال آتے اور اپنے من پسند فنکاروں کو اپنے روبرو پاکر والہانہ محبت کااظہار کرتے ، گو کہ زکوٹا گزشتہ کچھ سالوں سے فالج کے مرض میں مبتلا تھے مگر پھر بھی وہ مسلسل بچوں کے لئے ڈرامہ کرتے تھے ، سید حسیب پاشا انہیں بھائیوں کی طرح عزیز رکھتے تھے یہی وجہ ہے کہ ٹی وی کے بعد تھیٹر پر بھی ہامون جادوگر اور زکوٹا جن کی جوڑی بیحد کامیاب تھی ، ویر جی سید حسیب پاشا کی بے پناہ محبتوں اور خلوص کی بدولت مجھے بارہامرتبہ ان کے شہرہ آفاق ڈرامہ جن اور جادوگر میں بطور “مہمان خصوصی” شرکت کرنے ، فنکاروں میں ایوارڈ تقسیم کرنے کااعزاز حاصل ہوا تو جب بھی میں ڈرامہ دیکھ رہی ہوتی میں دوران ڈرامہ دو بڑے فنکاروں کی پرفارمنس سے نہ صرف محظوظ ہوتی بلکہ ہر بار کچھ نہ کچھ سیکھنے کاموقع ملتا، یہ بچوں کاواحد ڈرامہ ہے جو مقبولیت کے ریکارڈ قائم کرچکا ہے ، ہنسی ہنسی میں بچوں بڑوں کی اصلاح ، فکری شعور، بیداری و آگہی سمیت معاشرتی زمہ داریوں سے بہترین انداز میں آگاہی کے لئے ان دونوں فنکاروں نے لازوال خدمات سرانجام دیں ، زکوٹا جن پر فالج کے حملے کے بعد ہامون جادوگر نے ڈرامے کی مقبولیت کے گراف میں کمی نہیں آنے دی اور نہ ہی زکوٹا جن کو کبھی محسوس ہونے دیا کہ وہ معذور ہوگئے ہیں بلکہ بہترین انداز سے وہ زکوٹا اور فنکاروں کی ٹیم کے ہمراہ پرفارم کرتے مگر جب بھی زکوٹا جن کی انٹری ہوتی تو ان کے لئے باقاعدہ سٹیج پر کرسی رکھی جاتی تاکہ وہ اپنے چاہنے والوں کو اپنی پرفارمنس سے خوش کرسکیں اوربچے بڑے انہیں زیادہ شوق سے دیکھتے تھے یعنی معذوری کے باوجود انہوں نے اپنے فن اور فینز سے رابطہ بحال رکھا، زکوٹا جن بہت ہی پیار کرنے والے فنکار تھے میں جب بھی ملی نہایت خوش اخلاقی سے پیش آتے سر پر پیار سے ہاتھ رکھتے اور دعائیں دیتے تھے، بلکہ میرے لئے بڑے اعزاز کی بات یہ بھی ہے کہ میرے بچوں علیز ے چوہدری ، عالیان چوہدری بھانجی امن الماس کو بھی جن اور جادوگر کے آزادی شو میں ان دوبڑے فنکاروں کی سرپرستی میں پرفارم کرنے کاگولڈن چانس ملا جو انہیں ساری عمر یاد دلاتا رہے گا کہ انہوں نے سٹیج پر کام کاآغاز بطور چائلڈ سٹار بڑے سٹارز کے ساتھ کام کرکے کیاتھا، مسز مطلوب منا لاہوری بھی کئ مرتبہ ان کی پرفارمنس دیکھنے تشریف لاتیں ، بلکہ جن اور جادوگر کی ٹیم میں سید حسیب پاشا المعروف ہامون جادوگر کی خصوصی محبت کی بدولت زکوٹا جن کے بیٹے بیٹیاں بھی بطور “جن” اور “پری” پرفارم کرتے ، بچوں اور بڑوں کو جب “کڑکھنا جن ” کا پتہ چلتا کہ وہ زکوٹا جن کے چھوٹے بیٹے ہیں تو وہ باپ بیٹوں کو دیکھ کر زیادہ خوش ہوتے ، بہرحال یہ بات سچ ہے کہ پاکستان میں بچوں کے لئے تھیٹر ہوہی نہیں رہا یہی واحد ڈرامہ تھا جس کی بدولت بچے اپنے من پسند فنکاروں ہامون جادوگر اور زکوٹا کی مشہور جوڑی کی پرفارمنس سے لطف اندوز ہوتے تھے ۔۔آج یہ جوڑی ٹوٹ گئ جس کا صدمہ ہم سبھی کو ہے ہم دعا کرتے ہیں کہ مالک منا لاہوری المعروف زکوٹا جن کی مغفرت فرمائے ان کے درجات بلند فرمائے ، سید حسیب پاشا ہامون جادوگر جن اور جادوگر کی ٹیم ، مسز مطلوب ان کے بچوں اور فینز کو صبر جمیل عطا فرمائے۔۔۔۔آمین

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں