A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Only variable references should be returned by reference

Filename: core/Common.php

Line Number: 257

A PHP Error was encountered

Severity: Warning

Message: Cannot modify header information - headers already sent by (output started at /home/pakist14/public_html/system/core/Exceptions.php:185)

Filename: libraries/Session.php

Line Number: 672

Pakistan News

اخبارات

اہم خبریں


آج سے ہزار سال بعد دنیا کیسی ہوگی ؟

آج سے ہزار سال بعد ہم او

اسلامی معاشرے کے خدوخال

دین اسلام تعمیر سیر ت و ک

16 دسمبر

16 دسمبر میں مون ہوں‘ نہی

سوات کی بیٹی

چلو کہ دشتِ جہالت کو خیر

عمران خان کے لیے

خان صاحب آپ نے 25 اپریل 1996

یا اللہ ہمیں بچالے

ارادوں اور بعض اوقات پخت

تحریکیں زور کیسے پکڑتی ہیں

دنیا کا شاید ہی کوئی ملک

عمران خان او ر ڈاکٹر طاہر القادری

کالم نگار | رحمت خان ورد

راستہ بن چکا ہے : جاوید چوہدری

جولاہاکپڑے بُننے والوں ک

کچھ قادری صاحب کے بارے میں

پاکستان پیپلزپارٹی کے دو

لاہور کینال اور موت کا خونی کھیل

ایسا محسوس ہوتا ہے کہ لاہ

آ بیل مجھے مار

جاوید قاضی کسی زمانے میں

قرض پر مبنی معیشت

پاکستان جوکہ غربت کے منح

Meet Us

Name*
Email*
Message*

ہلدی کا ناقابل یقین فائدہ جدید تحقیق میں سامنے آگیا

Last Updated:22-01-2015

یو یارک(نیوزڈیسک)اگر آپ ماضی کی کسی بری یا تلخ بات کو بھلانا چاہتے ہیں تو زیادہ سے زیادہ ہلدی کا استعمال کریں کیونکہ اس میں یہ خاصیت موجود ہے کہ یہ آپ کے دماغ سے برے واقعات کو بھلانے میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔سٹی یونیورسٹی نیو یارک میںکی گئی تحقیق میں یہ پتہ چلا ہے کہ ہلدی برے واقعات کو دماغ سے مٹا سکتی ہے۔ اہرین نفسیات نے چوہوں کو ایک مخصوص آواز پر ڈرنے کی ٹریننگ دی۔ مشاہدے میں یہ بات سامنے آئی کہ جن چوہوں کو ہلدی ملی غذا کھلائی گئی تھی وہ اس مخصوس آواز پر بالکل بھی نہیں ڈرے۔تحقیق کار پروفیسر گلین سکافے کا کہنا ہے کہ یہ بات علم میں آئی ہے کہ جن لوگوںکو ماضی میں کچھ تلخ تجربات ہوئے ہوں اور وہ اس سے چھٹکارا حاصل کرنا چاہتے ہوں ان کے لئے ہلدی مفید ہے۔تحقیق کی تفصیلات بتاتے ہوئے پروفیسر گلین کا کہنا تھا کہ ہمارے دماغ میں باتیں نیوران کے درمیان ہونے والے نئے رابطے میں محفوظ ہوتی ہے۔ابتداءمیں یہ باتیں مبہم سی ذہن میں موجود ہوتی ہیںلیکن بعد میں یہ پختہ ہو جاتی ہیںاور جب پختہ بات کو یاد کیا جاتا ہے تو وہ چند لمحوں کے لئے کمزور ہوتی ہے اور دماغ انہیں نئی بات سمجھتا ہے اور اگر اس دوران کچھ نہ کیا جائے تو یہ باتیں مزید پختہ ہو جاتی ہیں۔ پروفیسر گلین کا کہنا ہے کہ انہیں یہ پتہ لگا کہ اس دوران اگر کوشش کی جائے تو ان یادوں کو پختہ ہونے سے روکا جا سکتا ہے اور تحقیق میں یہ علم ہوا کہ ہلدی کے جزئیات سے ایسا ممکن ہے۔اس کا مزید کہنا تھا کہ کئی نفسیاتی بیماریاں اور الزائمرز جیسی پیچیدہ بیماریوں سے بھی ہلدی کے استعمال سے نجات مل سکتی ہے۔

Share or Like:

Fallow Us:

مزید خبریں