A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Only variable references should be returned by reference

Filename: core/Common.php

Line Number: 257

A PHP Error was encountered

Severity: Warning

Message: Cannot modify header information - headers already sent by (output started at /home/pakist14/public_html/system/core/Exceptions.php:185)

Filename: libraries/Session.php

Line Number: 672

Pakistan News

اخبارات

اہم خبریں


آج سے ہزار سال بعد دنیا کیسی ہوگی ؟

آج سے ہزار سال بعد ہم او

اسلامی معاشرے کے خدوخال

دین اسلام تعمیر سیر ت و ک

16 دسمبر

16 دسمبر میں مون ہوں‘ نہی

سوات کی بیٹی

چلو کہ دشتِ جہالت کو خیر

عمران خان کے لیے

خان صاحب آپ نے 25 اپریل 1996

یا اللہ ہمیں بچالے

ارادوں اور بعض اوقات پخت

تحریکیں زور کیسے پکڑتی ہیں

دنیا کا شاید ہی کوئی ملک

عمران خان او ر ڈاکٹر طاہر القادری

کالم نگار | رحمت خان ورد

راستہ بن چکا ہے : جاوید چوہدری

جولاہاکپڑے بُننے والوں ک

کچھ قادری صاحب کے بارے میں

پاکستان پیپلزپارٹی کے دو

لاہور کینال اور موت کا خونی کھیل

ایسا محسوس ہوتا ہے کہ لاہ

آ بیل مجھے مار

جاوید قاضی کسی زمانے میں

قرض پر مبنی معیشت

پاکستان جوکہ غربت کے منح

Meet Us

Name*
Email*
Message*

گلوبٹ نے جہاں اپنی حرکتوں سے شہرت پائی وہیں ان کے نام سے متعارف گیم نے بھی دھوم مچادی

Last Updated:28-06-2014

سانحہ لاہور کے اہم کردار گلو بٹ کا چرچا شہر شہر، گلی گلی اور ایوانوں میں تو تھا ہی لیکن اب موصوف اس قدر مقبول ہوگئے ہیں کہ ان کے نام سے ایک گیم متعارف کرادیا گیا ہے جسے اسمارٹ فون میں ڈاؤن لوڈ کرنے کے بعد گلو گردی سے محظوظ ہوا جاسکتا ہے۔ گلو بٹ کے نام سے متعارف کردہ گیم میں وہی کچھ ہے جو سانحہ لاہور میں دیکھنے کو ملا، یعنی ایک حواس باختہ شخص لاٹھیاں مار مار کر سڑکوں پر کھڑی گاڑیاں توڑتا ہے اور ہر گاڑی کو توڑنے کے پوائنٹس ملتے ہیں جس پر گلو بٹ اپنی مونچھوں کو تاؤ دے کر خوشی کا اظہار کرتا ہے جبکہ اس موقع پر لوگ گلو بٹ کی اس تمام کارروائی کا صرف تماشا ہی دیکھتے رہتے ہیں۔ گلو بٹ گیم مارکیٹ میں آنے کے فوری بعد متعدد صارفین اسے کھیل چکے ہیں اور وہ اسمارٹ فون صارفین جو اس سے قبل گلو گردی سے لاعلم تھے وہ اپنے موبائل فون کے ” گوگل پلے” آپشن میں جاکر صرف ” گلو” لکھ کر اس گیم کو ڈاؤن لوڈ کرسکتے ہیں۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک اور ٹوئیٹر پر تو گلو گردی کی دھوم ہی دھوم ہے اور باقاعدہ طور پر گلوبٹ کے نام سے پیجز بھی بن چکے ہیں جس پر لوگ سانحہ لاہور کے حوالے سے اپنے ردعمل کا اظہار کر رہے ہیں۔

Share or Like:

Fallow Us:

مزید خبریں