A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Only variable references should be returned by reference

Filename: core/Common.php

Line Number: 257

A PHP Error was encountered

Severity: Warning

Message: Cannot modify header information - headers already sent by (output started at /home/pakist14/public_html/system/core/Exceptions.php:185)

Filename: libraries/Session.php

Line Number: 672

Pakistan News

اخبارات

اہم خبریں


آج سے ہزار سال بعد دنیا کیسی ہوگی ؟

آج سے ہزار سال بعد ہم او

اسلامی معاشرے کے خدوخال

دین اسلام تعمیر سیر ت و ک

16 دسمبر

16 دسمبر میں مون ہوں‘ نہی

سوات کی بیٹی

چلو کہ دشتِ جہالت کو خیر

عمران خان کے لیے

خان صاحب آپ نے 25 اپریل 1996

یا اللہ ہمیں بچالے

ارادوں اور بعض اوقات پخت

تحریکیں زور کیسے پکڑتی ہیں

دنیا کا شاید ہی کوئی ملک

عمران خان او ر ڈاکٹر طاہر القادری

کالم نگار | رحمت خان ورد

راستہ بن چکا ہے : جاوید چوہدری

جولاہاکپڑے بُننے والوں ک

کچھ قادری صاحب کے بارے میں

پاکستان پیپلزپارٹی کے دو

لاہور کینال اور موت کا خونی کھیل

ایسا محسوس ہوتا ہے کہ لاہ

آ بیل مجھے مار

جاوید قاضی کسی زمانے میں

قرض پر مبنی معیشت

پاکستان جوکہ غربت کے منح

Meet Us

Name*
Email*
Message*

بین الاقوامی این جی او ’سیو دی چلڈرن‘ کی بندش کا فیصلہ موخر

Last Updated:15-06-2015

وزارت داخلہ نے بین الاقوامی این جی او سیو دی چلڈرن کی بندش سے متعلق نیا نوٹیفکیشن جاری کر دیا، بندش کا فیصلہ موخر اسلام آباد: بین الاقوامی تنظیم سیو دی چلڈرن کے پاکستان میں دوبارہ کام شروع کرنے کے لئے دباؤ بڑھا تو حکومت نے اس کے سامنے سرِ تسلیمِ خم کر دیا۔ این جی او کے افسروں نے مختلف سیاست دانوں اور بیورکریٹس سے رابطے کئے جس کے بعد وزارت داخلہ نے نیا نوٹیفکیشن جاری کیا جس میں سیو دی چلڈرن کی بندش کے حکم کو تاحکم ثانی موخر کر دیا گیا ہے۔ خیال رہے کہ اس سے پہلے وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے بلند و بانگ دعوے کرتے ہوئے کہا تھا کہ این جی او پر پابندی اس لئے عائد کی گئی کیونکہ وہ حکومتِ پاکستان کی جانب سے مجوزہ دائرہ کار سے باہر کام کر رہی تھی۔ وفاقی وزیر داخلہ کے مطابق اس پابندی سے پاکستان میں کام کرنے والی این جی اوز اور عالمی دنیا کو پیغام دیا کہ پاکستان کی قومی سلامتی پر کسی صورت سمجھوتا نہیں کیا جائے گا۔ وزارت داخلہ کے نئے نوٹیفکیشن نے لوگوں کے ذہنوں میں سوال پیدا کردیا ہے کہ یہ کس قسم کا سمجھوتا ہوا ہے کہ راتوں رات این جی او کی بندش کا حکم نامہ روک دیا گیا ہے۔

Share or Like:

Fallow Us:

مزید خبریں