A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Only variable references should be returned by reference

Filename: core/Common.php

Line Number: 257

A PHP Error was encountered

Severity: Warning

Message: Cannot modify header information - headers already sent by (output started at /home/pakist14/public_html/system/core/Exceptions.php:185)

Filename: libraries/Session.php

Line Number: 672

Pakistan News

اخبارات

اہم خبریں


آج سے ہزار سال بعد دنیا کیسی ہوگی ؟

آج سے ہزار سال بعد ہم او

اسلامی معاشرے کے خدوخال

دین اسلام تعمیر سیر ت و ک

16 دسمبر

16 دسمبر میں مون ہوں‘ نہی

سوات کی بیٹی

چلو کہ دشتِ جہالت کو خیر

عمران خان کے لیے

خان صاحب آپ نے 25 اپریل 1996

یا اللہ ہمیں بچالے

ارادوں اور بعض اوقات پخت

تحریکیں زور کیسے پکڑتی ہیں

دنیا کا شاید ہی کوئی ملک

عمران خان او ر ڈاکٹر طاہر القادری

کالم نگار | رحمت خان ورد

راستہ بن چکا ہے : جاوید چوہدری

جولاہاکپڑے بُننے والوں ک

کچھ قادری صاحب کے بارے میں

پاکستان پیپلزپارٹی کے دو

لاہور کینال اور موت کا خونی کھیل

ایسا محسوس ہوتا ہے کہ لاہ

آ بیل مجھے مار

جاوید قاضی کسی زمانے میں

قرض پر مبنی معیشت

پاکستان جوکہ غربت کے منح

Meet Us

Name*
Email*
Message*

اب ہمیں مزید سخت فیصلے کرنا ہوں گے، وزیراعظم

Last Updated:13-05-2015

وزیراعظم کی زیرصدارت پاک چین اقتصادی راہداری سے متعلق پارلیمانی جماعتوں کے رہنماؤں کا اجلاس ہوا جس میں سانحہ صفورا گوٹھ میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی جب کہ اس موقع وزیراعظم نواز کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت تمام قومی معاملات کو اتفاق رائے سے حل کرنے پر یقین رکھتی ہے، مشاورت جمہوریت کی روح ہے اور ہم نے معیشت ، سلامتی اور دہشت گردی سمیت تمام اہم قومی معاملات پر ہمیشہ پارلیمنٹ کو اعتماد میں لیا ہے۔ اجلاس کے دوران منصوبہ بندی و ترقی کے وفاقی وزیر احسن اقبال نے پاک چین اقتصادی راہداری پر بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پاک چین اقتصادی راہداری کا مقصد طویل المدتی پروگرام کے تحت ملک کے تمام حصوں کی یکساں ترقی کو یقینی بنانا ہے جب کہ توانائی ، بنیادی ڈھانچے ، گوادر بندرگاہ کی ترقی اور ٹرانسپورٹیشن کی بہتری کے شعبوں میں چار ورکنگ گروپس تشکیل دئیے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مجوزہ پاک چین اقتصادی راہداری جو خطے میں تبدیلی کا باعث بنے گی اور اس سے تاریخی چینی سرمایہ کاری سمیت بڑے پیمانے پر بین الاقوامی سرمایہ کاری کو راغب کرنے میں بھی مدد ملے گی۔ پارلیمانی جماعتوں کے رہنماؤں کا اجلاس شروع ہوا تو متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما خالد مقبول صدیقی نے اجلاس کو مختصر یا موخر کرنے کی اپیل کی جس پر جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان اور اے این پی کے سربراہ اسفند یار ولی نے تجویز دی کہ پاک چین اقتصادی راہداری اہم معاملہ ہے اس لئے اجلاس کو جاری رہنا چاہیئے۔ اس موقع پر وزیراعظم نے خالد مقبول صدیقی کو کہا کہ اہم اور اہمیت کے حامل معاملات میں مشاورت کو بائی پاس نہیں کرسکتے،اجلاس کے بعد اکٹھے کراچی چلتے ہیں اب ہمیں مزید سخت فیصلے کرنا ہوں گے۔

Share or Like:

Fallow Us:

مزید خبریں