A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Only variable references should be returned by reference

Filename: core/Common.php

Line Number: 257

A PHP Error was encountered

Severity: Warning

Message: Cannot modify header information - headers already sent by (output started at /home/pakist14/public_html/system/core/Exceptions.php:185)

Filename: libraries/Session.php

Line Number: 672

Pakistan News

اخبارات

اہم خبریں


آج سے ہزار سال بعد دنیا کیسی ہوگی ؟

آج سے ہزار سال بعد ہم او

اسلامی معاشرے کے خدوخال

دین اسلام تعمیر سیر ت و ک

16 دسمبر

16 دسمبر میں مون ہوں‘ نہی

سوات کی بیٹی

چلو کہ دشتِ جہالت کو خیر

عمران خان کے لیے

خان صاحب آپ نے 25 اپریل 1996

یا اللہ ہمیں بچالے

ارادوں اور بعض اوقات پخت

تحریکیں زور کیسے پکڑتی ہیں

دنیا کا شاید ہی کوئی ملک

عمران خان او ر ڈاکٹر طاہر القادری

کالم نگار | رحمت خان ورد

راستہ بن چکا ہے : جاوید چوہدری

جولاہاکپڑے بُننے والوں ک

کچھ قادری صاحب کے بارے میں

پاکستان پیپلزپارٹی کے دو

لاہور کینال اور موت کا خونی کھیل

ایسا محسوس ہوتا ہے کہ لاہ

آ بیل مجھے مار

جاوید قاضی کسی زمانے میں

قرض پر مبنی معیشت

پاکستان جوکہ غربت کے منح

Meet Us

Name*
Email*
Message*

شام میں باغیوں نے ’’جسر الشغور‘‘ شہر پر قبضہ کر لیا

Last Updated:26-04-2015

دمشق / بغداد: شام میں باغیوں نے پیش قدمی کرتے ہوئے شمال مغربی صوبے ادلیب کے اہم شہر جسرالشغور پر قبضہ کرلیا جب کہ جھڑپوں میں 60 شامی اہلکار مارے گئے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ 4 برسوں میں پہلی مرتبہ جسرالشغور شہر شامی فوج کے ہاتھوں سے نکلا ہے اور اب اس شہر پر القاعدہ سے منسلک تنظیم النصرہ فرنٹ اور باغیوں کا مکمل کنٹرول ہے، لڑائی میں شامی فوج کے 60 اہلکار مارے گئے۔ شامی جنگی طیاروں نے جسر الشغور پر30 فضائی حملے کیے جس میں باغیوں سمیت 10 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔ جسر الشغور سے پسپائی اختیار کرتے ہوئے شامی فوج نے23 قیدیوں کو قتل کردیا۔ جسر الشغور پر باغیوں کے قبضے کے نتیجے میں پورے ادلیب صوبے پر جنگجوؤں کا کنٹرول قائم ہو گیا ہے۔ شام میں انقلابی فورسز نے درعا گورنری سے ایک افغان جنگجو کو حراست میں لیا ہے جس نے دوران حراست اعتراف کیاکہ وہ ایران کے راستے شام میں داخل ہوا اور اس کے ہمراہ 600 شدت پسند بھی شمالی مشرقی شہر درعا میں داخل ہوئے تھے۔ عراق میں بھی داعش کے جنگجوؤں نے صوبے انبار میں التھرتھارڈیم کے کچھ حصے اور متعدد فوجی چھاؤنیوں پر قبضہ کرلیا ہے۔ داعش کے خودکش حملے اور شدید لڑائی کے دوران 2 اعلیٰ فوجی افسران اور 10 فوجی ہلاک ہوگئے۔ مرنے والوں میں عراقی فوج کے اسٹاف بریگیڈیئر جنرل حسن عباس اور اسٹاف کرنل ہلال متار شامل ہیں، 10 فوجی زخمی بھی ہوئے۔ عراقی شہر فلوجہ میں داعش اور فورسز میں گھمسان کی لڑائی جاری ہے۔

Share or Like:

Fallow Us:

مزید خبریں